آخری اتمام حُجّت

اشتہار مولوی ثناء اللہ صاحب کے ساتھ آخری فیصلہ پر تحقیق مقالہ

قاضی محمد نذیر فاضل

حضرت مسیح موعود علیہ السلام نے 15 اپریل 1907ء کو جو مضمون مولوی ثناء اللہ امرتسری کے ساتھ آخری فیصلہ کے موضوع پر تحریرفرماکر 17 اپریل 1907ء کے بدر اخبار کے شمارہ  میں شائع فرمایا تھا وہ ایک لمبے عرصہ سے موضوع بحث ہے،  اس پر مناظرات بھی ہوچکے ہیں۔

محترم قاضی محمد نذیر صاحب ناظر اشاعت لٹریچر و تصنیف صدر انجمن احمدیہ ربوہ نے مورخہ 14 دسمبر 1973ء کو اس موضوع پر ایک قیمتی مقالہ سپرد قلم فرمایا جس میں یہ ثابت فرمایا کہ مولوی ثناء اللہ نے حضرت مسیح موعود علیہ السلام کو فیصلہ کن قرار ہی نہیں دیا جس سے یہ مضمون کالعدم ہوگیا، مگر حضرت مسیح موعودعلیہ السلام نے اس کے بعد ایک اعلان کے ذریعہ مولوی ثناء اللہ امرتسری اور دیگر مخالفین کو اپنے ایک خاص الہام کے من جانب اللہ ہونے پر مؤکد بعذاب قسم کھانے کی دعوت دی۔ اور خود مؤکد بعذاب قسم کھاکر دعوت دی۔ لیکن مولوی ثناء اللہ نے اس کا کوئی جواب نہ دیا۔ اس لئے یہ دعوت مولوی ثناء اللہ اور تمام مولویوں پر آخری اتمام حجت ہے۔

کاتب کی لکھائی میں تیار ہونے والے اس مختصر رسالہ میں جہاں مولوی ثناء اللہ سے پیش آمدہ واقعات و حالات کا زمانی تسلسل پیش کیا گیا ہے، وہاں ان دستاویزات سے استفادہ کرکے ان کا اصل عکس بھی مہیا کیا گیا ہے جو مولوی صاحب کی گریز پائی کو ثابت کرتی ہیں۔



PDF

آن لائن