دوسری آئینی ترمیم 1974ء ۔ خصوصی کمیٹی میں کیا گزری

۔

1974 کا سال  دنیا کی آئینی تاریخ کا عجوبہ روزگار واقعہ لایا جب پاکستان کے آئین میں دوسری آئینی ترمیم کرکے بزعم خود یہ فیصلہ کیا گیا کہ ملک میں بسنے والے کسی گروہ کا کیا مذہب ہونا چاہئے۔

اس ترمیم سے قبل ملک میں آئین سازی کے لئے قائم پوری قومی اسمبلی کو ہی  ایک سپیشل کمیٹی میں تبدیل کردیا گیا اور اس اسپیشل کمیٹی نے مسئلہ پر غور شروع کردیا، اس کمیٹی میں جماعت احمدیہ کے ایک وفد کو بھی بطور گواہ بلایا گیا۔

اس زیر نظر چھ صد صفحات کی کتاب میں اس خصوصی کمیٹی کی کارروائی کا مضبوط  دلائل اور عقل و نقل کی روشنی میں مفصل جائزہ پیش کیا گیا ہے۔ یہ تفصیلی تجزیہ ان آئین سازوں کی حقیقت بھی عیاں کررہا ہے  اور جماعت احمدیہ کے خلاف ہونے والی گہری سازشوں کا پردہ بھی چاک کر رہا ہے۔



PDF

آن لائن